اتوار
21 جمادی الثانی 1441
اہم ترین خبریں
روضہ مبارک حضرت عباس(ع) کے منصوبے
محطّات تحلية المياه (R.O station)
محطّات تحلية المياه (R.O station)
مجمعات صحيات  واحة الزائر  مشروع المجموعة الصحّية الأولى
مشروع الفردوس مشروع ترميم وصيانة القبة الشريفة
مزید
جمعہ کے خطبے
جمعہ کا خطبہ
14/02/2020
اعلی دینی قیادت: صاحبان اقتدار ذاتی مفادات کو اجتماعی مفادات پر ترجیح دیتے نظر آتے ہیں
خطبہ میں اہم نکات
تمام انسانی معاشروں کے لئے زندگی کے تمام شعبوں میں اقدار اور اخلاقیات کی ضرورت ہوتی ہے، اس سے قطع نظر کہ ان کا تعلق کسی آسمانی مذہب سے ہے یا نہیں۔
معاشرتی تعلقات کی سالمیت اور معاشرے کی مضبوطی کے لیے انسانی اقدار اور اخلاق کو ایک لازمی ستون سمجھا جاتا ہے
اقدار و اخلاقیات سے باہمی تعاون اور معاشرتی یکجہتی پیدا ہوتی ہے
معاشی لین دین و معیشت کو ناانصافی اور استحصال سے محفوظ رکھنے کے لئے بھی ایک بنیادی ستون انسانی اقدار ہیں
اخلاقیات فرد اور معاشرے کے نفسیاتی استحکام کا ضامن ہیں
معاشرے کی ترقی اور خوشحالی کی بنیاد اقدار و اخلاقیات ہیں
اخلاقی اقدار کو نظرانداز کرنے معاشرہ اپنی طاقت، عزت، فخر، وقار اور ترقی سے محروم ہو جاتا ہے
یہ اخلاق ہی ہے جس سے اقوام باقی رہتی ہیں اگر ان کا اخلاق چلا جائے تو وہ بھی ماضی کا حصہ بن جاتی ہیں
ترقی یافتہ معاشرے اقدار اور اخلاقیات کا ایک ثقافت کی حیثیت سے خیال رکھتے ہیں اور اسے روزمرہ کے معمولات میں بدل دیتے ہیں
ترقی یافتہ اقوام کی ترقی اور خوشحالی کا راز معاشرتی انصاف، دوسروں کے حقوق اور قانون کا احترام کرنا، ایمانداری، امانتداری، اور وفاء عہد، اپنے کام میں کمال اور مہارت حاصل کرنے میں پوشیدہ ہے۔
عراقی معاشرے میں بہت ساری انسانی اقدار اور اخلاقیات موجود ہیں جیسے سخاوت، قربانی، صبر، استقامت، حمیت وغیرت اور وطن و مذہب کے لئے جوش و جذبہ
بدقسمتی سے عراقی معاشرے میں کچھ اخلاقی خامیاں اور غلط طرز عمل بھی پائے جاتے ہیں جن میں سرفہرست خود غرضی، جھوٹ، منافقت اور بغیر ثبوت کے دوسروں پر الزام لگانا، ان کی ہتک حرمت، قومی مذہبی دینی اور قبائلی تعصب، دوسروں پر زبانی و عملی حملے، بدتمیزی اور حدود سے تجاوز، شدت پسندی اور سخت گیری، رشوت اور دوسرے کے مال پر تجاوز، دوسروں کا ناحق مالی و معاشی استحصال، دوسروں کے مال پر قبضہ اور مالی خردبرد، خاندانی ٹوٹ پھوٹ، اخلاقی زوال، منشیات کا استعمال اور اس کی اسمگلنگ، خودکشی کا رجحان اور عراقی شناخت کی بجائے دوسرے خطوں کے حلیے اختیار کرنے کا رجحان وغیرہ
ہمیں عراقی شناخت کے جوہر اور عنصر کو برقرار رکھنے کی ضرورت ہے۔
اسکولوں اور ریاستی اداروں میں اخلاقیات ، اقدار اور اصولوں پر عمل ہونا چاہئے
اساتذہ کو اخلاقیات کے موضوع پر لیکچرز دینے چاہئے طلباء کو اخلاقیات کی اہمیت اور ان کا نفاذ کرنے کا طریقہ سکھانے کی ضرورت ہے
میڈیا ہاؤسز اور ذرائع ابلاغ کو بھی اخلاقیات کے پہلو کو اجاگر کرنا چاہیے
اخلاقیات، اقدار اور اصولوں کو نافذ کرنے میں حکومت کا کردار دکھائی دینا چاہیے
لوگوں کو بھی دوسرں کے غلط طریقوں کو نظرانداز نہیں کرنا چاہئے کیونکہ یہ سب کی ذمہ داری ہے
اس مسئلے کے علاج کے لیے ہمیں ہر فورم پر شعور اجاگر کرنے کی اشد ضرورت ہے
سکولز اور دیگر تعلیمی اداروں کو اخلاقیات اور اقدار پر توجہ دیتے ہوئے انھیں اولین ترجیح قرار دینا چاہیے
ادباء کو اس موضوع پر لکھنا چاہیے، گھر کے سرپرست کو بھی اس حوالے اپنا کردار ادا کرنا چاہیے، اس سلسلہ میں ہمیں قرآن و احادیث اور انبیاء و آئمہ کی سیرت کو اپنا نمونہ عمل قرار دینا ہو گا
الشيخ عبد المهدي الكربلائي
خطبوں کی فہرست
خطبة الجمعة
عراق کی موجودہ صورت حال کے بارے میں اعلی دینی قیادت کا اہم بیان ...
خطبة الجمعة
دینی قیادت ایک بار پھر پرامن مظاہرین کے خلاف تشدد کے استعمال کی پرزور مذمت کرتی ہے ...
خطبة الجمعة
عراق کے موجودہ حالات کے بارے میں اعلی دینی قیادت آیت اللہ سیستانی (دام ظلہ) کا موقف ...
حضرت عباس(ع) کی ضریح کے پاس اپنی نیابت میں زیارت پڑھوانے کے لیے نام لکھیں
نام
ای میل
کن کی نیابت میں زیارت پڑھی جائے
ویڈیو لائبریری
اتحاد بین المسلمین فورم
شیخ عبد الصاحب طائی کا روضہ مبارک حضرت عباس(ع) کے صحن میں خطاب 7رمضان 1439هـ
نماز جمعہ کا دوسرا خطبہ/ خطیب علامہ شيخ عبد المهدي كربلائي / مقام: روضہ مبارک امام حسین(ع)/ 26 جمادي الاولى 1438هـ بمطابق 24 فروری 2017 ء
نماز جمعہ کا پہلا خطبہ/ خطیب علامہ شيخ عبد المهدي الكربلائي / مقام: روضہ مبارک امام حسین(ع)/ 26 جمادي الاولى 1438هـ بمطابق 24 فروری 2017 ء
نماز جمعہ کا دوسرا خطبہ/ خطیب علامہ سید احمد صافی/ مقام: روضہ مبارک امام حسین(ع)/ 19 جمادي الاول 1438هـ بمطابق 17 فروری 2017ء
نماز جمعہ کا پہلا خطبہ/ خطیب علامہ سید احمد صافی/ مقام: روضہ مبارک امام حسین(ع)/ 19 جمادي الاول 1438هـ بمطابق 17 فروری 2017 ء
نماز جمعہ کا دوسرا خطبہ/ خطیب علامہ شيخ عبد المهدي كربلائي/ مقام: روضہ مبارک امام حسین(ع)/ 12 جمادي الاولى 1438هـ بمطابق 10 فروری 2017 ء
نماز جمعہ کا پہلا خطبہ/ خطیب علامہ شيخ عبد المهدي كربلائي/ مقام: روضہ مبارک امام حسین(ع)/ 12 جمادي الاولى 1438هـ بمطابق 10 فروری 2017 ء
نماز جمعہ کا پہلا خطبہ/ خطیب علامہ سید احمد صافی/ مقام: روضہ مبارک امام حسین(ع)/ 23 ربيع الاول الخير 1438هـ بمطابق23دسمبر 2016 ء
نماز جمعہ کا دوسرا خطبہ/ خطیب علامہ سید احمد صافی/ مقام: روضہ مبارک امام حسین(ع)/ 5 جمادي الاول 1438هـ بمطابق 3 فروری2017 ء
نماز جمعہ کا پہلا خطبہ/ خطیب علامہ سید احمد صافی/ مقام: روضہ مبارک امام حسین(ع)/ 5 جمادي الاول 1438هـ الموافق 3 فروری2017 ء
نماز جمعہ کا دوسرا خطبہ/ خطیب علامہ سید احمد صافی/ مقام: روضہ مبارک امام حسین(ع)/ 23 ربيع الاول 1438هـ بمطابق 23 دسمبر 2016 ء
نماز جمعہ کا پہلا خطبہ/ خطیب علامہ سید احمد صافی/ مقام: روضہ مبارک امام حسین(ع)/ 9 ربيع الاول الخير 1438هـ بمطابق 9 دسمبر 2016 ء
امام حسین علیہ السلام کے یومِ شہادت کے ساتویں دن روضہ مبارک حضرت امام حسین(ع) اور روضہ مبارک حضرت عباس(ع) کے خدام کی طرف سے ماتمی جلوس کا انعقاد
دنیا کا سب سے بڑا جلوس عزاء
روضہ مبارک حضرت عباس(ع) میں ماتمی جلوسوں کی آمد ۔ 9 محرم 1438ھ
روضہ مبارک حضرت عباس(ع) میں ماتمی جلوسوں کی آمد ۔ 9 محرم 1438ھ
روضہ مبارک حضرت عباس(ع) میں ماتمی جلوسوں کی آمد ۔ 9 محرم 1438ھ
روضہ مبارک حضرت عباس(ع) میں ماتمی جلوسوں کی آمد ۔ 8 محرم 1438ھ
روضہ مبارک حضرت عباس(ع) میں ماتمی جلوسوں کی آمد ۔ 7 محرم 1438ھ
روضہ مبارک حضرت عباس(ع) میں ماتمی جلوسوں کی آمد ۔ 6 محرم 1438ھ
روضہ مبارک حضرت عباس(ع) میں ماتمی جلوسوں کی آمد ۔ 5 محرم 1438ھ
روضہ مبارک حضرت عباس(ع) میں ماتمی جلوسوں کی آمد ۔ 4 محرم 1438ھ
3 محرم الحرام 1438ھ کو روضہ مبارک حضرت عباس(ع) کے صحن مبارک میں ماتمی جلوس عزاء
فوٹو لائبریری